اُردو انجمن

گوشہٴ غزل => اندازِ غزل => موضوع کی ابتدا کرنے والے: Desi بروز فروری 26, 2008, 10:21:50 شام

عنوان: Suroor Barabankvi ki Ghazal-Aay JunooN Kuch Tou Khule
مرسلہ: Desi بروز فروری 26, 2008, 10:21:50 شام
Ghazal-e-Suroor Barabankvi
عنوان: Re: Suroor Barabankvi ki Ghazal-Aay JunooN Kuch Tou Khule
مرسلہ: سرور عالم راز بروز فروری 29, 2008, 10:35:09 شام

محبی طارق صاحب: آداب
سرور بارہ بنکوی صاحب کی غزل سنا کر آپ نے کتنی ہی پرانی یادوں کو تازہ کر دیا۔ وہ زمانہ یاد آگیا جب غزل روایتی اور جذباتی ہو تی تھی۔غزل کے لغوی معنی :اپنی محبوبہ سے بات کرنا: ہیں سو اسی مناسبت سے اس میں عشق کی باتیں ہوتی ہیں۔ سرور صاحب پرانے :اسکول: کے تھے سو ان کی غزل بھی اسی رنگ کی ہے ۔ میں یہی رنگ پسند کرتا ہوں چنانچہ بہت مستفید و لطف اندوز ہوا۔ غزل عنایت کرنے کا دلی شکریہ۔
سرور عالم راز سرور
عنوان: Re: Suroor Barabankvi ki Ghazal-Aay JunooN Kuch Tou Khule
مرسلہ: mohammed abdulqadeer بروز مارچ 01, 2008, 08:35:45 صبح
badi piyari ghazal hai janaab
عنوان: Re: Suroor Barabankvi ki Ghazal-Aay JunooN Kuch Tou Khule
مرسلہ: Desi بروز مارچ 03, 2008, 08:56:53 شام

محبی طارق صاحب: آداب
سرور بارہ بنکوی صاحب کی غزل سنا کر آپ نے کتنی ہی پرانی یادوں کو تازہ کر دیا۔ وہ زمانہ یاد آگیا جب غزل روایتی اور جذباتی ہو تی تھی۔غزل کے لغوی معنی :اپنی محبوبہ سے بات کرنا: ہیں سو اسی مناسبت سے اس میں عشق کی باتیں ہوتی ہیں۔ سرور صاحب پرانے :اسکول: کے تھے سو ان کی غزل بھی اسی رنگ کی ہے ۔ میں یہی رنگ پسند کرتا ہوں چنانچہ بہت مستفید و لطف اندوز ہوا۔ غزل عنایت کرنے کا دلی شکریہ۔
سرور عالم راز سرور
Jinaab sarwar Saheb Aadaab
Bilkul sahii kaha. Inse kuch istarah bhee aap ki mumaclat hai ke inke walid bhii aap ke walid ki tarah aik achay shaer the.
Bohat khushii howii ke ghazal ka intekhaab sahii raha aur aap wa deeghar is se lutf andoaz howay.
Izhaar-e-pasandeedghi ka shukria.
Khair andaish
Tariq. al-maroof Desi

Jinaab Abdul Qadeer Saheb Aap ka bhii shukria ke ghazal ki mehsoosaat wa tabaa per acer ko meri hosla afzaaii ke liyay pasand ki soorat tehreer kia. Shukria bhaii.