اُردو انجمن

 


مصنف موضوع: جواب درکار ہے  (پڑھا گیا 193 بار)

0 اراکین اور 1 مہمان یہ موضوع دیکھ رہے ہیں

غیرحاضر BANDA E NACHEEZ

  • Adab Dost
  • ***
  • تحریریں: 584
جواب درکار ہے
« بروز: اگست 12, 2017, 12:03:32 صبح »
ایک سوال
کیا ذیل کے مصرع میں لفظ "لے" کی ے گرائی جا سکتی ہے؟ اگر نہیں گرائی جا سکتی تو کیوں؟

اک دیا ہاتھ میں لے کر جانا

بحر۔۔۔ فاعلاتن مفاعلن فعلن



غیرحاضر Zeeshan_Haider

  • Adab Aashnaa
  • *
  • تحریریں: 41
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #1 بروز: اگست 12, 2017, 12:52:50 شام »
گرائی تو جا سکتی ہیں مگر کچھ پڑھا جائے گا اک دیا ہاتھ میں لکر جانا۔ جو کہ سننے میں کچھ بھلا معلوم نہیں ہوگا۔ اور چھوٹی بحر کی خوبصورتی اسی میں ہے کہ کم از کم حروف کا اسقاط ہو۔ باقی اساتذہ بہتر جانیں۔

غیرحاضر سرور عالم راز

  • Muntazim-o-Mudeer
  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 6220
  • جنس: مرد
    • Kalam-e-Sarwar
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #2 بروز: اگست 12, 2017, 07:47:32 شام »

مکرمی یوسف/ذیشان صاحب: سلام مسنون
یوسف صاحب نے ایک مصرع عنایت کیا ہے اور اس کی تقطیع لکھی ہے:
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
تقطیع: فاعلاتن مفاعلن فعلن
بعد ازاں سوال کیا ہے کہ کیا "لے" کی "ے" گرائی جا سکتی ہے؟
سب سے پہلے تو یہ عرض ہے کہ "لے" کی "ے" نہیں گرائی جا سکتی ہے۔ اس کے بعد یہ کہ آپ دونوں حضرات سے گزارش ہے کہ تقطیع کے اصول سیکھ لیجئے۔ اگر عروض کی کوئی کتاب آپ کے پاس نہیں ہے تو میری کتاب "آسان عروض اور نکات شاعری" خرید لیجئے۔ اس سے آپ کو بہت مدد ملے گی۔
یہ مصرع فاعلاتن مفاعلن فعلن میں کسی طرح تقطیع نہیں ہوسکتا ہے۔ اگر آپ تقطیع شروع کریں گے تو دوسرے قدم پر ہی لڑکھڑا کر گر جائیں گے۔ یہ مصرع بحر متقارب کی ایک غیر معروف مزاحف شکل ہے۔ اس کی تفعیل درج ذیل ہے ۔ساتھ ہی تقطیع بھی لکھ رہا ہوں:
فعلن فعلن فعلن (ع پر زیر ) فعلن فع
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
اک دن (فعلن)، یا ہا (فعلن)، ت م لے (فعلن: ع پر زیر)، کر جا (فعلن)، نا (فع)
امید ہے کہ بات صاف ہو گئی ہوگی۔ کوئی مشکل ہو تو لکھئے۔

سرورعالم راز



غیرحاضر Dr. Ahmad Nadeem Rafi

  • Adab Aashnaa
  • *
  • تحریریں: 98
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #3 بروز: اگست 12, 2017, 07:58:44 شام »
محترم سرور عالم راز صاحب
آپ نے مصرع غلط نوٹ کر لیا تھا -( اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا )

بندہ ناچیز نے جو مصرع دیا تھا وہ کچھ یوں ہے-
 
اک دیا ہاتھ میں لے کر جانا (فا علا تن فعلا تن  فعلن ) 

مخلص
ڈاکٹر احمد ندیم رفیع

غیرحاضر سرور عالم راز

  • Muntazim-o-Mudeer
  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 6220
  • جنس: مرد
    • Kalam-e-Sarwar
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #4 بروز: اگست 12, 2017, 10:50:34 شام »
محترم سرور عالم راز صاحب
آپ نے مصرع غلط نوٹ کر لیا تھا -( اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا )

بندہ ناچیز نے جو مصرع دیا تھا وہ کچھ یوں ہے-
 
اک دیا ہاتھ میں لے کر جانا (فا علا تن فعلا تن  فعلن ) 

مخلص
ڈاکٹر احمد ندیم رفیع


بجا فرمایا ندیم صاحب! اب بغیر چشمہ لگائے اگر کمپیوٹر دیکھوں تو غلط پڑھ لیتا ہوں۔ واپس جا کر مصرع دیکھا تو اپنی غلطی کا احساس ہوا۔ بہت شکریہ۔ مصرع کی تقطیع وہی ہے جو آپ نے تجویز کی ہے۔ میں یوسف صاحب اور ذیشان صاحب سے بھی معذرت خواہ ہوں کہ مصرع غلط پڑھ گیا۔
راوی اس لمحہ مجھ پر ہنس رہا ہے اور کہہ رہا ہے کہ "اور نہ لگائیے چشمہ!" ظالم چوکتا نہیں ہے! :)

سرررعالم راز




غیرحاضر BANDA E NACHEEZ

  • Adab Dost
  • ***
  • تحریریں: 584
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #5 بروز: اگست 17, 2017, 01:19:13 شام »

مکرمی یوسف/ذیشان صاحب: سلام مسنون
یوسف صاحب نے ایک مصرع عنایت کیا ہے اور اس کی تقطیع لکھی ہے:
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
تقطیع: فاعلاتن مفاعلن فعلن
بعد ازاں سوال کیا ہے کہ کیا "لے" کی "ے" گرائی جا سکتی ہے؟
سب سے پہلے تو یہ عرض ہے کہ "لے" کی "ے" نہیں گرائی جا سکتی ہے۔ اس کے بعد یہ کہ آپ دونوں حضرات سے گزارش ہے کہ تقطیع کے اصول سیکھ لیجئے۔ اگر عروض کی کوئی کتاب آپ کے پاس نہیں ہے تو میری کتاب "آسان عروض اور نکات شاعری" خرید لیجئے۔ اس سے آپ کو بہت مدد ملے گی۔
یہ مصرع فاعلاتن مفاعلن فعلن میں کسی طرح تقطیع نہیں ہوسکتا ہے۔ اگر آپ تقطیع شروع کریں گے تو دوسرے قدم پر ہی لڑکھڑا کر گر جائیں گے۔ یہ مصرع بحر متقارب کی ایک غیر معروف مزاحف شکل ہے۔ اس کی تفعیل درج ذیل ہے ۔ساتھ ہی تقطیع بھی لکھ رہا ہوں:
فعلن فعلن فعلن (ع پر زیر ) فعلن فع
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
اک دن (فعلن)، یا ہا (فعلن)، ت م لے (فعلن: ع پر زیر)، کر جا (فعلن)، نا (فع)
امید ہے کہ بات صاف ہو گئی ہوگی۔ کوئی مشکل ہو تو لکھئے۔

سرورعالم راز

مکرمی سرور عالم راز سرور صاحب۔سلام مسنون
بات دراصل یہ ہے کہ فیس بک پہ ایک دوست کی غزل کا یہ مصرع دیکھا جو کہ میری مزکورہ بحر میں تھی پوری غزل۔۔میں نے اس دوست سے بولا کہ اس مصرع میں "لے" کی "ے" نہیں گرائی جا سکتی اگرچہ عروض میں الفاظ کے آخر سے ی،ے،و،ا،ں وغیرہ گرانے کی اجازت ہے۔۔لیکن وہ بضد تھا اگرچہ تقطیع کرنا بھی جانتا تھا۔سو میں نے جانتے ہوئے بھی یہ سوال آپکے سامنے رکھا تاکہ مجھے بھی مزید سیکھنے کو ملے اور میرا سوال کا اصل مقصد یہاں ے نہ گرانے کی وجہ معلوم کرنا تھا جو کہ میرے نزدیک یہ ہے کہ "لے" کی ے گرانے سے اسکی ادائیگی ٹھیک سے نہیں ہوتی۔۔۔اور اس سے بھی میں نے بولا کہ اپنے اساتذہ سے کنفرم کرے۔۔خیر اس کے اساتذہ کے مطابق بھی اس مصرع میں "لے" کی ے گر سکتی ہے۔۔

غیرحاضر BANDA E NACHEEZ

  • Adab Dost
  • ***
  • تحریریں: 584
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #6 بروز: اگست 17, 2017, 01:37:11 شام »

مکرمی یوسف/ذیشان صاحب: سلام مسنون
یوسف صاحب نے ایک مصرع عنایت کیا ہے اور اس کی تقطیع لکھی ہے:
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
تقطیع: فاعلاتن مفاعلن فعلن
بعد ازاں سوال کیا ہے کہ کیا "لے" کی "ے" گرائی جا سکتی ہے؟
سب سے پہلے تو یہ عرض ہے کہ "لے" کی "ے" نہیں گرائی جا سکتی ہے۔ اس کے بعد یہ کہ آپ دونوں حضرات سے گزارش ہے کہ تقطیع کے اصول سیکھ لیجئے۔ اگر عروض کی کوئی کتاب آپ کے پاس نہیں ہے تو میری کتاب "آسان عروض اور نکات شاعری" خرید لیجئے۔ اس سے آپ کو بہت مدد ملے گی۔
یہ مصرع فاعلاتن مفاعلن فعلن میں کسی طرح تقطیع نہیں ہوسکتا ہے۔ اگر آپ تقطیع شروع کریں گے تو دوسرے قدم پر ہی لڑکھڑا کر گر جائیں گے۔ یہ مصرع بحر متقارب کی ایک غیر معروف مزاحف شکل ہے۔ اس کی تفعیل درج ذیل ہے ۔ساتھ ہی تقطیع بھی لکھ رہا ہوں:
فعلن فعلن فعلن (ع پر زیر ) فعلن فع
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
اک دن (فعلن)، یا ہا (فعلن)، ت م لے (فعلن: ع پر زیر)، کر جا (فعلن)، نا (فع)
امید ہے کہ بات صاف ہو گئی ہوگی۔ کوئی مشکل ہو تو لکھئے۔

سرورعالم راز

واجب الاحترام سرور عالم راز سرور صاحب الحمدللہ یہ آپکا اور اردو انجمن کا اور آسان عروض کا ہی فیض ہے کہ آپکا یہ ادنیٰ شاگرد مطلع سنتے یا پڑھتے ہی بحر بھی پہچان لیتا ہے اور تقطیع بھی کر لیتا ہے۔۔اور ناچیز کی کتاب "محبت معتبر ٹھہری" جس میں آپکے تاثرات بھی شامل ہیں پبلش ہو گئی ہے۔ان شاء اللہ جلد خدمت میں پیش کروں گا

غیرحاضر سرور عالم راز

  • Muntazim-o-Mudeer
  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 6220
  • جنس: مرد
    • Kalam-e-Sarwar
جواب: جواب درکار ہے
« Reply #7 بروز: اگست 17, 2017, 06:28:34 شام »

مکرمی یوسف/ذیشان صاحب: سلام مسنون
یوسف صاحب نے ایک مصرع عنایت کیا ہے اور اس کی تقطیع لکھی ہے:
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
تقطیع: فاعلاتن مفاعلن فعلن
بعد ازاں سوال کیا ہے کہ کیا "لے" کی "ے" گرائی جا سکتی ہے؟
سب سے پہلے تو یہ عرض ہے کہ "لے" کی "ے" نہیں گرائی جا سکتی ہے۔ اس کے بعد یہ کہ آپ دونوں حضرات سے گزارش ہے کہ تقطیع کے اصول سیکھ لیجئے۔ اگر عروض کی کوئی کتاب آپ کے پاس نہیں ہے تو میری کتاب "آسان عروض اور نکات شاعری" خرید لیجئے۔ اس سے آپ کو بہت مدد ملے گی۔
یہ مصرع فاعلاتن مفاعلن فعلن میں کسی طرح تقطیع نہیں ہوسکتا ہے۔ اگر آپ تقطیع شروع کریں گے تو دوسرے قدم پر ہی لڑکھڑا کر گر جائیں گے۔ یہ مصرع بحر متقارب کی ایک غیر معروف مزاحف شکل ہے۔ اس کی تفعیل درج ذیل ہے ۔ساتھ ہی تقطیع بھی لکھ رہا ہوں:
فعلن فعلن فعلن (ع پر زیر ) فعلن فع
اک دنیا ہاتھ میں لے کر جانا
اک دن (فعلن)، یا ہا (فعلن)، ت م لے (فعلن: ع پر زیر)، کر جا (فعلن)، نا (فع)
امید ہے کہ بات صاف ہو گئی ہوگی۔ کوئی مشکل ہو تو لکھئے۔

سرورعالم راز

واجب الاحترام سرور عالم راز سرور صاحب الحمدللہ یہ آپکا اور اردو انجمن کا اور آسان عروض کا ہی فیض ہے کہ آپکا یہ ادنیٰ شاگرد مطلع سنتے یا پڑھتے ہی بحر بھی پہچان لیتا ہے اور تقطیع بھی کر لیتا ہے۔۔اور ناچیز کی کتاب "محبت معتبر ٹھہری" جس میں آپکے تاثرات بھی شامل ہیں پبلش ہو گئی ہے۔ان شاء اللہ جلد خدمت میں پیش کروں گا

عزیزم یوسف صاحب: سلام مسنون
جواب خط کا شکریہ۔ شاعری کے حوالے سے جو بھی آپ سیکھ چکے ہیں یا سیکھ رہے ہیں وہ آپ کی محنت،لگن اور شوق کا ثمرہ ہے۔ احباب سے گفتگو اور ادبی تبادلہءخیال یقینا اس کو جلا دینے میں بہت معاون ہے۔ یہ آپ کی فراخدلی ہے کہ آپ اپنے دوستوں کو اپنی کامیابیوں کی وجہ سمجھتے ہیں۔ علم کی کوئی انتہا نہیں ہے۔ لگے رہئے اور بہتر سے بہتر کی کوشش برابر جاری رکھئے۔ انشا اللہ آپ خود بھی خوش ہوں گے اور دوسرے بھی آپ کی ادبی کوششوں سے فیضیاب ہوں گے۔
دوسری بات جو میں کہنا چالتا ہوں وہ یہ ہے کہ آپ کی کتاب کی اشاعت سے دلی مسرت ہوئی۔ اللہ تعالی آپ کو ایسی ہی متعدد کامیابیوں سے سرفراز کرے۔ جہاں تک کتاب مجھ کو بھیجنے کا تعلق ہے میں پاکستان سے امریکہ کے ہوش ربا ڈاک خرچ سے بخوبی واقف ہوں۔ اتنے پیسے خرچ کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ایسا ہی ہے تو یہ پیسے کسی ضرورت مند کو دے دیجئے۔ جزاک اللہ خیرا۔ کتاب سے زیادہ کسی کی مدد سے دل خوش ہوگا۔ انشا اللہ۔
سرورعالم راز



 

Copyright © اُردو انجمن