اُردو انجمن

 


مصنف موضوع: مرغیاں مرغے سبھی مل کر یہاں کُٹ کُٹ کریں  (پڑھا گیا 121 بار)

0 اراکین اور 1 مہمان یہ موضوع دیکھ رہے ہیں

غیرحاضر Ismaa'eel Aijaaz

  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 3323
مرغیاں مرغے سبھی مل کر یہاں کُٹ کُٹ کریں
« بروز: جولائی 23, 2018, 10:20:06 شام »

قارئین کرام آداب عرض ہیں ،  میرا یہ تازہ کلام آپ سب کی نذر
عرض کیا ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

رنجشیں کُٹ کُٹ کریں ناچاقیاں کُٹ کُٹ کریں
مرغیاں مرغے سبھی مل کر یہاں کُٹ کُٹ کریں

مرغی نے انڈہ دیا سب مرغیاں کُٹ کُٹ کریں
مرغے بھی خوش ہوں یہاں رطب اللساں کُٹ کُٹ کریں

ہر طرف ہے غلغلہ کُٹ کُٹ کُٹو کُٹ کُٹ کُٹو
مرغیاں مرغے سبھی مل کر بیاں کُٹ کُٹ کریں

ایک مرغا بن کے لیڈر کر رہا تقریر ہے
آئے گی تبدیلی گر ہم سب یہاں کُٹ کُٹ کریں

انقلاب آ جائے گا بس تم ہمارا ساتھ دو
تم یہاں کُٹ کُٹ کرو اور ہم وہاں کُٹ کُٹ کریں

سونے کا انڈہ اگر سب مرغیاں دینے لگیں
دیکھ خوشحالی زمیں کی آسماں کُٹ کُٹ کریں

آؤ ہم  سب مرغیوں مرغوں کے بن کر ہمنوا
ملک میں تبدیلی لائیں خوش گماں ، کُٹ کُٹ کریں

ساری دنیا میں ہمارا نام ہو جائے خیالؔ
ہر طرف کُٹ کُٹ صدا ہو ، ہم جہاں کُٹ کُٹ کریں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔

توجہ کا طلبگار

اسماعیل اعجاز خیالؔ
« آخری ترمیم: جولائی 23, 2018, 10:27:31 شام منجانب Ismaa'eel Aijaaz »


محبتوں سے محبت سمیٹنے والا
خیال آپ کی محفل میں آچ پھر آیا

خیال

muHabbatoN se muHabbat sameTne waalaa
Khayaal aap kee maiHfil meN aaj phir aayaa

(Khayaal)

غیرحاضر Mushir Shamsi

  • Adab Shinaas
  • **
  • تحریریں: 300
جواب: مرغیاں مرغے سبھی مل کر یہاں کُٹ کُٹ کریں
« Reply #1 بروز: جولائی 25, 2018, 12:51:50 شام »

مکرمی جناب خیال صاحب: سلام علیکم
آپ کی کُٹ کُٹ پڑھ کر بہت مزا آیا۔ اردو میں اور خاص طور سے شاعری میں مزاح بہت کم ہے۔جس کو دیکھیں روتا نظر آتا ہے۔ چونکہ ہماری زندگی اور معاشرہ میں دکھ درد بہت ہے اور خوشی کم اس لئے شاعری بھی یہی رنگ پیش کرتی ہے۔ رہی سہی خوشی مذہب کے ٹھیکے داروں نے اپنی پابندیوں سے مار رکھی ہے۔ کوئی ضروری نہیں کہ مزاح کا معیار اونچا ہو۔ جیسے یہ نظم معمولی ہے لیکن مختلف ہے اور اس سے آدمی لطف اندوز ہوتا ہے۔ اتنا بھی بہت ہے۔ داد اورشکریہ قبول کیجئے اور کہتے رہئے۔

خادم: مشیر شمسی

 

Copyright © اُردو انجمن