اُردو انجمن

 


مصنف موضوع: جانتا ہوں کس لیئے سارا جہاں خاموش ہے  (پڑھا گیا 45 بار)

0 اراکین اور 1 مہمان یہ موضوع دیکھ رہے ہیں

غیرحاضر faypal

  • Adab Shinaas
  • **
  • تحریریں: 429
جانتا ہوں کس لیئے سارا جہاں خاموش ہے
« بروز: اگست 09, 2018, 06:38:29 صبح »
 جانتا ہوں کس لیئےسارا جہاں خاموش ہے

 یہ زمیں خاموش ہے اور آسماں خاموش ہے

کون دے جاتا ہے راتوں کو یہ تاروں کا لباس

پوچھتا ہوں کہکشاں سے کہکشاں خاموش ہے

آ گیا ہوں اس لیئے میں تنگ کنارے چھوڑ کے

شور تھا دریا میں بحرِبیکراں خاموش ہے

 روز آتی ہے درختوں سے پرندوں کی صدا

 میری بستی کا تو ہر اک نو جواں خاموش ہے

 کیا کہوں لوگوں سے میری کوئی بھی سنتا نہیں

 میری محرومی کا ہر اک ہی نشاں خاموش ہے

 ہر طرف پنچھی ہیں لیکن آشیاں کوئی نہیں

 پھول ہیں بکھرے ہوئے اور باغباں خاموش ہے

 سوچ کر یہ بات افضلؔ وہ اچانک رو پڑا

 بولنا تھا جس جگہ پر وہ وہاں خاموش ہے

 


Ch.Afzal

غیرحاضر nawaz

  • Adab Shinaas
  • **
  • تحریریں: 441
جواب: جانتا ہوں کس لیئے سارا جہاں خاموش ہے
« Reply #1 بروز: اگست 10, 2018, 11:59:24 صبح »
محترم افضل صاحب سلامِ مسنون

آپ کی غزل پڑھنے کے بعد ذہن پر عمدہ تاثر قائم ہوا کیونکہ
اشعار کی روانی اور تخیل خوب ہے سو داد قبول ہو۰ 

ایک نکتہ کی وضاحت چاہوں گا،
شعر ہر طرف پنچھی ہیں لیکن آشیاں کوئ نہیں
      پھول ہیں بکھرے ہوئے اور باغباں خاموش ہے
     اس شعر کے مصرع ثانی میں باغباں کی خاموشی
     کا راز کیا ہے ؟ کیونکہ مصرع اولی سے کوئ ربط
     نہیں نظر آرہا  ہو سکتا ہے میری کم علمی آڑے آ رہی ہو
     کچھ وضاحت کر دیں تو مشکل دور ہو

     سدا شاد و آباد رہئے         دعا گو             نواز

 

Copyright © اُردو انجمن