اُردو انجمن

 


مصنف موضوع: سراج مانگو  (پڑھا گیا 49 بار)

0 اراکین اور 1 مہمان یہ موضوع دیکھ رہے ہیں

غیرحاضر Ismaa'eel Aijaaz

  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 3323
سراج مانگو
« بروز: اگست 12, 2018, 02:35:45 صبح »

قارئین کرام آداب عرض ہیں ایک فی البدیہہ ہلکی پھلکی بات چیت آپ احباب سے ہو جائے امید ہے پسند آئے گی 
عرض کیا ہے


۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سراج مانگو
جو راج مانگو

نہ زندگی سے
خراج مانگو

محبتوں کا
سماج مانگو

نہ نفرتوں کا
مزاج مانگو

قضا سے یوں مت
علاج مانگو

نہ بیتے کل سے
تم آج مانگو

نہ بھیک میں تم
اناج مانگو

خیالؔ خود سے
ہی لاج مانگو

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

توجہ کا طلبگار
اسماعیل اعجاز خیالؔ


محبتوں سے محبت سمیٹنے والا
خیال آپ کی محفل میں آچ پھر آیا

خیال

muHabbatoN se muHabbat sameTne waalaa
Khayaal aap kee maiHfil meN aaj phir aayaa

(Khayaal)

غیرحاضر nawaz

  • Adab Shinaas
  • **
  • تحریریں: 441
جواب: سراج مانگو
« Reply #1 بروز: گزشتہ روز بوقت 05:19:35 صبح »
محترم اسماعیل اعجاز صاحب سلامِ مسنون

جناب ایک منفرد اور مختصر بحر میں غزل پڑھنے کو ملی
ایک دو نکات کی وضاحت چاہوں گا ،بھئ بحر اور وزن تلاش
کرنے میں ناکام رہا اپنی کم علمی گردانتا ہوں ،دوسرے شعر و سخن
کے میدان میں آپ کی تجرباتی کاوش ہے یا پھر قرطاس شعر گوئ
میں کہیں اور بھی موجود ہے۰ 
                                    ََنہ بیتے کل سے
                                    تم آج مانگو           بہت خوب داد قبول فرمائے
            اجازت دیجئے آپ کے نئے کلام کا انتظار رہے گا   اللہ حافظ و ناصر

غیرحاضر Ismaa'eel Aijaaz

  • Saaheb-e-adab
  • *****
  • تحریریں: 3323
جواب: سراج مانگو
« Reply #2 بروز: گزشتہ روز بوقت 09:22:56 شام »
محترم اسماعیل اعجاز صاحب سلامِ مسنون

جناب ایک منفرد اور مختصر بحر میں غزل پڑھنے کو ملی
ایک دو نکات کی وضاحت چاہوں گا ،بھئ بحر اور وزن تلاش
کرنے میں ناکام رہا اپنی کم علمی گردانتا ہوں ،دوسرے شعر و سخن
کے میدان میں آپ کی تجرباتی کاوش ہے یا پھر قرطاس شعر گوئ
میں کہیں اور بھی موجود ہے۰ 
                                    ََنہ بیتے کل سے
                                    تم آج مانگو           بہت خوب داد قبول فرمائے
            اجازت دیجئے آپ کے نئے کلام کا انتظار رہے گا   اللہ حافظ و ناصر


 جناب محترم نواز صاحب
وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

جنابِ عالی درست پہچانا آپ نے یہ بھی ایک تجرباتی کاوش ہے جس کا مقصد صرف سیکھنا سکھانا ہے ، آپ جانتے ہی ہیں کہ کوئی بھی شعر اپنے مصرعے میں کم از کم دو ارکان پر مشتمل ہوتا ہے مکمل شعر مربع یا تین ارکان مسدس چار ارکان مثمن کی اصطلاح کے حامل ہوتے ہیں جیسے کہ

صدر + عروض
ابتدا + ضرب

کو ہم مربع کہیں گے


صدر + حشو  + عروض
ابتدا + حشو  + ضرب

کو ہم مسدس کہیں گے


صدر + حشو  + حشو  + عروض
ابتدا + حشو  + حشو  + ضرب

کو ہم مثمن کہیں گے

میرے اس کلام کا وزن بحر رجز کے ایک رکن پر مشتمل ہے یعنی مصرع اولیٰ میں ایک رکن اور مصرع ثانی میں ایک رکن مکمل شعر

صدر
ابتدا

اب اسے ہم کیا کہیں گے ماہرینِ عروض ہی اس کا کوئی نام تجویز کر سکتے ہیں
بحر رجز میں
رجز مخبون مرفل کا زحاف بنائیں تو

مستفعلن کا دوسرا حرف خبن ہو کر نئی صورت متفعلن بنی جس کا مبدل مفاعلن اور مرفل مفاعلاتن بنا چنانچہ میرے اس کلام کا وزن صرف ایک رکن مفاعلاتن بنا

آئیے مطلع کی تقطیع دیکھتے ہیں

سراج مانگو
س  را جُ ما گو
مُ فا عِ لا تن
مفاعلاتن

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جو راج مانگو
جُ را جُ ما گو
مُ فا عِ لا تن
مفاعلاتن

آپ نے مشاہدہ کیا کہ صرف مفاعلاتن ہی وزن ہے

ماہرین عروض سے گزارش ہے کہ اگر میں غلطی پر ہوں تو میری اصلاح فرمائیں اللہ آپ سبھی کو سدا سلامت رکھے اپنا بہت خیال رکھیے اپنی دعاؤں میں یاد رکھیے
دعاگو

محبتوں سے محبت سمیٹنے والا
خیال آپ کی محفل میں آچ پھر آیا

خیال

muHabbatoN se muHabbat sameTne waalaa
Khayaal aap kee maiHfil meN aaj phir aayaa

(Khayaal)

 

Copyright © اُردو انجمن